حریت (ع) چیرمین میر واعظ عمر فاروق برصغیر کی 5بااثر شخصیات میں شامل

سری نگر؍؍کے این ایس ؍؍حریت کانفرنس (ع) چیرمین میر واعظ عمر فاروق کو مسلسل پانچویں سال ’دی رائیل اسلامک اسٹریٹجک اسلامک اسٹیڈیز سنٹر، جورڈن‘ کی جانب سے دنای کی 500بااثر مسلم شخصیات اور برصغیر میں منتخب 5افراد میں انتہائی بااثر سیاسی و مذہبی شخصیت کی حیثیت سے منتخب کیا گیا ہے۔ کشمیر نیوز سروس (کے این ایس) کو موصولہ بیان کے مطابق حریت کانفرنس (ع)کے چیرمین میرواعظ عمر فاروق کو مسلسل پانچویں سال ’دی رائیل اسلامک اسٹریٹجک اسلامک اسٹیڈیز سنٹر، جورڈن‘ کی جانب سے دنیا کی 500بااثر مسلم شخصیات اور برصغیر میں منتخب 5افراد میں انتہائی بااثر سیاسی و مذہبی شخصیت کی حیثیت سے منتخب کیاگیا ہے۔’دی مسلم 500‘کی 2019 کی سالانہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ جموں کشمیر میں موجودہ میرواعظ محمد عمر فاروق کو انکی سماج ، تعلیم ، سیاست، ملی اور سماجی میدانوں میں جو بے لوث اور مخلصانہ خدمات انجام دی ہیں ان کے اعتراف میں اس عالمی اعزاز سے نوازا جارہا ہے۔’دی مسلم 500‘ی مذکورہ رپورٹ کے مطابق میرواعظ نے اپنے والد گرامی ممتاز دینی و سیاسی رہنما شہید ملت میرواعظ مولوی محمد فاروق کی1990میں ناگہانی شہادت کے فوراً بعد کشمیری عوام کی شدید خواہش اور اصرار پر صرف 17 سال کی عمر میں میرواعظ کشمیر کا منصب سنبھالا اور اس دوران اپنی تعلیمی اور منصبی ذمہ داریاں ادا کرنے کے ساتھ ساتھ 1993میں کشمیری عوام کی حق خودارادیت پر مبنی برحق جدوجہد کو عالمی سطح پر متعارف اورمسئلہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت کو اجاگر کرانے کیلئے کشمیر کی جملہ دینی، ملی اور سیاسی جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرکے حریت کانفرنس کی داغ بیل ڈالی اور تب سے لیکرآج تک مسلسل موصوف کشمیر ی عوام کی حق و انصاف سے عبارت جدوجہد کو نہ صرف آگے بڑھا رہے ہیں بلکہ اس ضمن میں انہیں اکثر و بیشتر قابض حکمرانوں کی جانب سے شدید قسم کے عذاب و عتاب، قدغنوں اور پابندیوں کا بھی سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس دوران حریت (ع) ترجمان نے مذکورہ ادارے کی جانب سے حریت (ع) چیرمین کو اس اعزاز سے نوازنے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میرواعظ کی مثبت دینی ، سیاسی اور سماجی خدمات کے اعتراف میں ’دی رائیل اسلامک اسٹریٹجک اسلامک اسٹیڈیز سنٹر، جورڈن‘ کی جانب سے ان کو دنیا کی 500بااثر مسلم شخصیات میں شامل کرنا دراصل کشمیریوں کے حق و انصاف کے مؤقف کی جیت اور کشمیری عوام کیلئے ایک قابل فخر اعزاز ہے۔اس دوران ترجمان نے سرکاری فورسز کے ہاتھوں کشمیر کے طول و عرض میں خاص طور پر دیالگام ، حاجن ، ماور ہندوارہ، ہارون سوپور، آری ہل پلوامہ،اننت ناگ، کولگام، آلسٹینگ اور دیگرکئی علاقوں میں شبانہ چھاپوںِ ،خانہ تلاشیوں ، پُر تشدد کارروائیوں، املاک و جائیداد کی توڑ پھوڑ اورنوجوانوں کی گرفتاریوں جن میں زبیر ناظم ، جاوید احمد آہنگر، مشتاق احمد شیخ ، واسق آہنگر، اور راحیل احمد شیخ نامی نوجوان اور دیگر افرادشامل ہیں پر شدید ردعمل کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ فورسزنے کالے قوانین اور تلاشی آپریشنوں کی آڑ میں اہالیان کشمیر پر ظلم و استبداد کا بازار گرم کررکھا ہے اور سخت سردی کے ایام میں آئے روز نہتے آبادی کے ایک بڑے حصے کو ظلم و جبر کا نشانہ بنایا جارہا ہے جو انتہائی افسوسناک اور قابل مذمت ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial