چلہ کلان کی40روزہ مدت ختم ،سردی کی شدت برقرار 

سرینگر سمیت وادی میں تازہ برفباری 
سرینگر ۔جموں شاہراہ پر پھر پسیاں گر آئیں ،آمد ورفت میں خلل ،سیکڑوں گاڑیاں درماندہ 
سرینگر؍؍کے این این ؍؍موسم سرما کے شہنشاہ کہلا نے والے ’چلہ کلان ‘ کی 40روزہ مدت ختم ہوچکی ہے ،تاہم محکمہ موسمیات کی پیشگی ،پیشگوئی کے عین کے مطابق بدھ کی صبح دارلحکومت سرینگر سمیت کشمیر وادی میں تازہ برفباری کا سلسلہ شروع ہوا جسکی وجہ سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوا ہے ۔اس دوران سرینگر ۔جموں شاہراہ پر پھر پسیاں گر آئیں جسکی وجہ سے شاہراہ کو آمد ورفت میں خلل پڑا ۔اس دوران قاضی گنڈ کے مقام پر مسافروں نے احتجاجی مظاہرے کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ فورسز گاڑیوں کو شاہراہ پر چلنے کی اجازت ہے ،لیکن عام مسافروں کیلئے یہ شجر ممنوع ہے ۔کشمیر نیوز نیٹ ورک کے مطابق چلہ کلان کی مدت ختم ہونے کے بیچ بدھ کو کشمیر وادی میں برفباری کا تازہ سلسلہ شروع ہوا ۔یہ سلسلہ بدھ کی علی الصبح شروع ہوا اور وقفے وقفے سے دن بھر جاری رہا ۔دارلحکومت سرینگر میں ہلکی برفباری ہوئی جبکہ دیگر اضلاع میں بارشوں کے ساتھ ساتھ برفباری بھی ہوئی ۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آئندہ چھ روز موسمی صورتحال ’تر ‘ ہی رہے گی ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق جموں کشمیر کے بیشتر حصوں میں بدھ کی رات کو برفباری ہوگی اور یہ سلسلہ جمعرات کو بھی وقفے وقفے سے جاری رہے گا ۔ ان کا کہناتھا کہ پہلگام ،گلمرگ اور کپوارہ میں بدھ کی صبح ہلکی برفباری درج کی گئی ۔انہوں نے کہا کہ بدھ رات سے ہلکی سے لیکر درمیانہ درجے کی برفباری کا قوی امکان ہے ۔ان کا کہناتھا کہ لداخ میں بھی برفباری ہونے کا امکان ہے ۔ان کا کہناتھا کہ برفباری 31جنوری کو اپنے شباب پر ہوگی ۔ان کا کہناتھا کہ برفباری کے سبب 31جنوری کو سرینگر ۔جموں شاہراہ پر ٹریفک کی روانی متاثر ہوسکتی ہے کیونکہ بانہال ۔رام بن میں بدھ کی رات اور جمعرات کو برفباری ہوسکتی ہے ۔اس ریاست بھر میں شبانہ درجہ حرارت میں بہتری دیکھنے کو ملی ۔محکمہ موسمیات کے ترجمان کے مطابق گرمائی دارلحکومت سرینگر میں کم سے کم درجہ حرارت منفی0.3ڈگری درج کیا گیا جبکہ گزشتہ رات یہ درجہ حرارت منفی5.4ڈگری درج کیا گیا تھا ۔ان کا کہناتھاکہ پہلگام میں منفی3.3ڈگری سیلشیس درج کیا گیا ۔گیٹ وے آف کشمیر قاضی گنڈ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 2.0ڈگری درج کیا گیا جبکہ گزشتہ رات یہ درجہ حرارت منفی7.8ڈگری تھا ۔کوکرناگ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی3.4ڈگری جبکہ گزشتہ رات یہ درجہ حرارت منفی7.3ڈگری درج کیا گیا تھا ۔سکی ریزاٹ گلمرگ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی7.5ڈگری درج کیا گیا جبکہ گزشتہ رات یہ درجہ حرارت منفی12.2تھا ۔سرحدی ضلع کپوارہ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی2.5ڈگری درج کیا گیا جبکہ گزشتہ رات یہ درجہ حرارت منفی7.8ڈگری درج کیا گیا تھا ۔وادی کشمیر میں سخت ترین سردیوں کے ایام کا پہلا مرحلہ یعنی شہنشاہ سرما ’چلہ کلان ‘ کی40روزہ مدت ختم ہوگئی ۔تاہم اس کے باوجود کشمیر وادی میں شدید سردی کی لہر جاری ہے ۔ابھی بھی اہلیان کشمیر کو مزید30روزہ سردیوں کے شدید ایام اور دوسرے وتیسرے مرحلے کے دوران چلہ خرد کے20دن اور چلہ بچہ کے10دنوں کا سامنا رہے گا ۔ان ایام کے دوران بھی وادی میں برفباری کا امکان رہتا ہے ۔ادھر سرینگر ۔جموں شاہراہ پر اُ س وقت گاڑیوں کی نقل وحرکت متاثر ہوئی جب شاہراہ پر تازہ پسیاں گرآئیں ۔ معلوم ہوا ہے کہسرینگر۔جموں شاہراہ پر بدھ کو ایک بار پھر پسیاں گر آئیں جس کی وجہ سے ٹریفک میں رکاوٹ پیدا ہوگئی۔حکام کے مطابق تازہ پسیاں گر آنے کا واقعہ رام بن علاقے میں پیش آگیا۔انہوں نے کہا کہ اس سے قبل پنتھال اور انوکھی فال علاقوں میں پسیاں گر آئی تھیں، جنہیں ہٹاکر شاہراہ کو یک طرفہ ٹریفک کے قابل بنایا گیا تھا۔حکام کے مطابق سرینگر سے جموں جانے والی گاڑیوں کو شاہراہ سے پسی صاف کرنے کے بعد ہی آگے بڑھنے کی اجازت دی جائے گی۔واضح رہے کہ موسم کی مسلسل خرابی کے باعث شاہراہ کو سوموار کے روز 6 دن بعد کھولا گیا تھا۔شاہراہ پر گاڑیوں کی آمد ورفت روکنے کی وجہ سے دوبارہ سیکڑوں گاڑیاں درماندہ ہوئیں ۔ادھر قاضی گنڈ کے مقام پر مسافروں کی ایک خاصی تعداد نے ٹریفک روکنے کے خلاف احتجاجی دھرنا دیا ۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ فورسز گاڑیوں کو شاہراہ پر چلنے کی اجازت دی جارہی ہے جبکہ عام مسافروں کی گاڑیوں کو بہانے بنا کر روک دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ شاہراہ پر ٹریفک جام کی وجہ سے مسافر گاڑیوں کو چلنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جبکہ شاہراہ پر فورسز گاڑیاں ٹریفک جام کی بنیادی وجہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ مسافروں کو مشکلات ومسائل کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social media & sharing icons powered by UltimatelySocial