ترال کے مضافات میں بادل پھٹنے سے بڑے پیمانے پر تباہی

رہاشی مکان واسکول تباہ ، رابطہ سڑک، بجلی اور پانی کا ترسیلی نظام درہم برہم
انتظامیہ اور متعلقہ محکمہ جات سہولیات کی بحالی میں مشغول
ترال کے این ایس حاجن ناڈ ترال میں بادل پھٹنے کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر تباہی مچ گئی جس دوران علاقے میں ایک رہائشی مکان اور ایک ایک مڈل سکول کی عمارت کو شدید نقصان پہنچ کر ناقابل استعمال بن گیا ہے جبکہ علاقے میں سیلابی پانی کے نتیجے میں پینے کا پانی بجلی اور رابطہ سڑک بھی ناکارہ ہو کر رہ گئی ۔اس دوران ایڈشنل ڈپٹی کمشنر ترال نے تمام محکوں کے افسران اور عملے کے ہمراہ واقعے کے فوراً بعد علاقے کا دورہ کر کے حالات کاجائز لیا۔جس دوران انہوں متعلقہ محکوں کو علاقے میں ضروری سہولیات کی فوری بحالی کی ہدایت دی ہے ۔کشمیر نیوز سروس ( کے این ایس ) کے مطابق جنوبی کشمیر کے تحصیل آری پل کے تحت آنے والے علاقے گوجر بستی حاجن ناڈ ستورہ میں سنیچر کے صبح سویرے تیز بارشوں کے دوران نذدیکی جنگلات میںبادل پھٹنے کی نتیجے میں پانی کا ایک سیلابی ریلا حاجن بستی میںداخل ہوا جس نے علاقے میں بڑے پیمانے پر تباہی مچا دی ہے جس میں بشیر احمد کوہلی ولد لالدین کوہلی کے رہاشی مکان تباہ ہوکر ناقابل استعمال بن گیا ہے تاہم اس دوران افراد خانہ پانی آنے سے چند منٹ قبل ہی یہاں سے محفوظ مقام کی طرف فرار ہوئے تھے جبکہ علاقے میں ایک گورنمنٹ مڈل سکوکوبھی شدید نقصان پہنچا ہے ۔مقامی لوگوں نے فون پر بتایا رابطہ سڑک ،کئی پل کے علاوہ بجلی اور پانی کا ترسیلی نظام مکمل طور ناکارہ ہو کر رہ گیا ہے۔ادھر ایڈشنل ڈپٹی کمشنر ترال شبیر احمد رینہ نے واقعے کے حوالے سے خبر موصول ہونے کے ساتھ ہی محکمہ مال اور دیگر محکموں کے افسران اور عملے کے ہمراہ دورہ کر کے علاقے میں تمام سہولیات کا جائزہ لے کرضروری سہولیات فوری طور بحال کرنے کا حکم دیا ہے جبکہ جے سی بی اور دیگر مشینری کو موقعے پر ہی کام پر لگا دیا گیا ہے ان کے ہمراہ محکمہ آب رسانی،آر اینڈ بی،بی ڈی او،تحصیلدار آری پل،محکمہ صحت کے ساتھ ساتھ مال اور باقی تمام محکموں کے زمہ دار افسران اور عملہ بھی موجود تھے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Social Share Buttons and Icons powered by Ultimatelysocial