حد متارکہ پر پھر کشیدگی ،کرناہ،بھمبر سیکٹروں میں آرپار آتشی گولہ 

پاکستانی زیر انتظام کشمیر کا شہری ہلاک
دونوں ممالک کا ایکدوسرے پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کا الزام 
سری نگر؍؍کے این این ؍؍شمالی سرحدی ضلع کپوارہ میں ہند پاک افواج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا ،جس دوران پاکستان نے دعویٰ کیا کہ بھارتی فوج کی فائرنگ سے پاکستانی زیر انتظام کشمیر کا ایک 51سالہ شہری ہلاک ہوا ۔تاہم بھارتی فوج نے الزام عائد کیا کہ پاکستانی فوج کی جانب سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی ،جس کا مؤثر جواب دیا گیا ۔کے این این کو ملی تفصیلات کے مطابق سرحدی ضلع کپوارہ کے کرناہ سیکٹر میں اتوار کی شب ہند۔ پاک افواج کے درمیان گولی باری کا تبادلہ ہوا ۔اطلاعات کے مطابق زیارت پوسٹ کے مقام پر ہند پاک افواج کے درمیان گولی باری کا تبادلہ ہوا۔دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے بلا اشتعال زیارت پوسٹ کرناہ کپوارہ کے مقام پر لائن آف کنٹرول پر اتوار کی شب8 بجے فائرنگ کی ،جس کا معقول جواب دیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر مسلسل جنگ بندی کی خلاف ورزیاں ہورہی ہیں ،جس کا مقصد مسلح جنگجوؤں کو اس طرف دھکیلنا ہوتا ہے ۔دفاعی ترجمان نے بتایا کہ اس طرف کسی طرح کا جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا ،تاہم پاکستان نے دعویٰ کیا ہے کہ لائن آف کنٹرول پر پاکستانی زیر انتظام کشمیر کا ایک شہری ہلاک ہوا ۔پاکستانی میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے ضلع بھمبر میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ سے ایک شہری جاں بحق ہوگیا۔حکام کے مطابق بھارت کی جانب سے ایک مرتبہ پھر ایل او سی کی خلاف ورزی کی گئی اور بھارتی فوج نے جنوبی بھمبر کے علاقے میں مارٹر شیل فائر کیے، جس کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق ہوا۔سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) بھمبر چوہدری ذوالقرنین سرفراز کا کہنا تھا کہ ’بھارتی فوج نے جنوبی بھمبر کے سماہنی سیکٹر کے گاؤں سرائے سعدآباد میں شیل فائر کیا جو گھر کے صحن میں شیل آکر گرا، جس کے نتیجے میں 51 سالہ گفتار حسین موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا جبکہ گھر کے دیگر افراد معجزانہ طور پر محفوظ رہے‘۔انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کی جانب بلااشتعال فائرنگ ’ جنگ بندی معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے‘۔دوسری جانب پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر خنجر سیکٹر میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا، جس کے نتیجے میں گفتار حسین جاں بحق ہوا جو جمڑا گاؤں کا رہائشی تھا۔خیال رہے کہ جس علاقے میں بھارتی فوج کی جانب سے بلا اشتعال فائرنگ کی گئی، پاک فوج اس علاقے کو خنجر سیکٹر کے نام سے موسوم کرتی ہے۔واضح رہے کہ نومبر 2003میں پاکستان اور بھارت کی افواج کے درمیان لائن آف کنٹرول پر ایک جنگ بندی کا تاریخی معاہدہ ہوا تھا۔تاہم اس معاہدے کے باوجود دونوں ممالک کی افواج کے درمیان گولی باری کاتبادلہ ہوتا رہتا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *