کشمیریوں ،لداخیوں اورجموں واسیوں کی شناخت کوسنگین خطرہ لاحق

دفعہ35-ہی منفردشہریت وحیثیت کاضامن
عمرعبداللہ اورانجینئررشیدغیرذمہ دارانہ کلاموں سے احتراض کریں :محمدیاسین خان
سری نگر؍؍کے این این؍؍وادی کے ایک سرکردہ ٹریڈلیڈرحاجی محمدیاسین خان نے یہ اندیشہ ظاہرکیاہے کہ اگردفعہ35Aکوزک پہنچایاگیاتوکشمیرکشمیریوں کا،لداخ لداخیوں کااورجموں جموں واسیوں کانہیں رہے بلکہ بیرون ریاستی باشندے یہاں آکرتینوں خطوں میں اپناغلبہ قائم کریں گے ۔انہوں نے عمرعبداللہ اورانجینئررشیدپرغیرذمہ دارانہ بیانات دینے کاالزام عائدکرتے ہوئے کہاکہ آج جب ریاستی عوام اپنی شناخت اورمنفردحیثیت کوبچانے کیلئے متحداورمنظم ہیں توکچھ لوگ بلاوجہ نفاق پرمبنی باتیں کرتے پھررہے ہیں ۔کے این این کے مطابق کشمیراکنامک الائنس کے چیئرمین اورکشمیرٹریڈرس اینڈمینوفیکچررس فیڈریشن کے صدرحاجی محمدیاسین خان نے اپنے جاری کرد ہ بیان میں عمرعبداللہکی جانب سے دفعہ 35Aکے معاملے پرمزاحمتی خیمے کی جدوجہدکی تنقیدکومضحکہ خیزقراردیتے ہوئے کہاکہ موصوف اپنے سیاسی مستقبل اوراہمیت کولیکرعدم تحفظ کاشکارہوئے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ یہ آئین ہندکوقبول کرنے کامعاملہ نہیں ہے بلکہ یہ منفردحیثیت اورشناخت کامسئلہ ہے جس کیلئے ریاست کے تینوں خطوں کے لوگوں نے ہوشمندی اورآپسی اتحادویکجہتی کامظاہرہ کیاہے ۔انہوں نے کہاکہ آج جبکہ سبھی لوگ متحدہیں اورباہمی اتحادپرزوردے رہے ہیں توعمرعبداللہ کوکیاسوجی کہ انہوں نے غیرذمہ دارانہ بیان دے ڈالا۔یاسین خان نے کہاکہ عمرعبداللہ جیسے لوگوں کوجب اپناسیاسی وجودہچکولے کھاتانظرآتاہے تووہ بے تکی باتیں کرنے لگتے ہیں ۔ کشمیراکنامک الائنس کے چیئرمین نے مزیدکہاکہ ہم سب کویہ بات ذہن نشین رکھناہوگی کہ اگر35Aکومنسوخ کیاجاتاہے تواقوام متحدہ سلامتی کونسل کی منظورکردہ رائے شماری کاباب بھی بندہوجائیگا۔انجینئررشیدکوہدف تنقیدبناتے ہوئے حاجی محمدیاسین خان نے کہاکہ ممبراسمبلی رائے شماری کی آوازتوبلندکرتے ہیں لیکن اُنھیں دفعہ 35Aکی منسوخی کے منفی اثرات ومضمرات کاذرابرابر بھی اداراک یااحساس نہیں ۔انہوں نے کہاکہ عمرعبداللہ اورانجینئررشیدجیسے لوگوں کوسیاسی پختگی اوراخلاص کاعملی ثبوت فراہم کرتے ہوئے یہ بات فراموش نہیں کرنی چاہئے کہ دفعہ35Aریاستی عوام کی شناخت اوروجودسے جڑاایک مشترکہ معاملہ ہے۔کشمیرٹریڈرس اینڈمینوفیکچررس فیڈریشن کے صدرحاجی محمدیاسین خان نے خبردارکیاکہ اگردفعہ35Aکوزک پہنچایاگیاتوکشمیرکشمیریوں کا،لداخ لداخیوں کااورجموں جموں واسیوں کانہیں رہے بلکہ بیرون ریاستی باشندے یہاں آکرتینوں خطوں میں اپناغلبہ قائم کریں گے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *